زیادہ سے زیادہ توفیق

وہ تو زیادہ توفیق (پاک رُوح کی قدرت تاکہ گناہ کی رغبت اور تمام باتوں کا مقابلہ کرسکیں) بخشتا ہے۔ اِسی لئے یہ آیا ہے کہ خُدا مغروروں کا مقابلہ کرتا ہے مگر فروتنوں (جو فضل حاصل کرنے کے لئے عاجزی کرتے ہیں) کو توفیق (مسلسل) بخشتا ہے۔                       یعقوب 4 : 6

سب اِنسانوں کے اندر گناہ کی رغبت موجود ہے لیکن یعقوب ہمیں سیکھاتا ہے کہ خُدا ہمیں اِن رغبتوں کا مقابلہ کرنے کے لئے زیادہ توفیق دے گا۔

میں نے اپنی مسیحی زندگی کا زیادہ تر حصہ اپنے غلط اِرادوں اور محرکات پر غالب آنے کی کوشش میں گزار دیا۔ لیکن میری اپنی کوشش نے مجھے اور پریشانی میں مبتلا کردیا۔ مجھے فروتنی اختیار کرکے یہ سیکھنا پڑا کہ خُدا فروتنوں کو توفیق عنایت کرتا ہے نہ کہ مغروروں کو۔ وہ ان کی مدد کرتا ہے جو حلیمی سے مانگتے ہیں۔

ہم اپنی سوچ کے مطابق بہت کچھ حاصل کرسکتے ہیں لیکن اکثر ہم اپنے آپ کوضرورت سے زیادہ بڑا سمجھتے ہیں۔ ہمیں یہ سمجھنا چاہیے کہ خُدا سے جُدا ہوکر ہم کچھ بھی نہیں کرسکتے اور ہمارا رویہ فروتنی کا ہونا چاہیے۔

اگرآپ کسی منصوبے پر کام کررہے ہیں یعنی اپنے جسم کی قوت میں کچھ حاصل کرنے کی کوشش میں ہیں تو آپ پریشان ہوسکتے ہیں۔ عین ممکن ہے کہ آپ نے یہاں تک اِقرارکرلیا ہوکہ  "میں جتنی بھی کوشش کرلوں میرا کوئی کام بھی نہیں بنتا!” جب تک آپ خُدا کے فضل پر بھروسہ کرنا نہیں سیکھیں گے آپ کو کسی بھی کام میں کامیابی نہیں ہوگی۔

آرام کریں۔ خُدا کو خُدا کی جگہ دیں۔ خود سے سختی نہ کریں۔ تبدیلی ایک عمل ہے جو آہستہ آہستہ آپ کو خُدا کی قربت میں لے جاتی ہے۔ آپ اپنے راستے پر ہیں اِس لئے سفر سے لطف اندوز ہوں۔

 

اگر آپ آزاد ہونا چاہتے ہیں تو انسانی کوشش کو چھوڑکر خُدا پر بھروسہ کرنے کے لئے تیار ہوجائیں۔

Facebook icon Twitter icon Instagram icon Pinterest icon Google+ icon YouTube icon LinkedIn icon Contact icon