کبھی ہِمّت نہ ہاریں

ہم نیک کام کرنے میں ہِمّت نہ ہاریں کیونکہ اگر بے دِل نہ ہوں گے تو عَین وقت پر کاٹیں گے۔                        (گلتیوں ۶ : ۹)

خُدا کی آواز نہ سُننے کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ بعض لوگ بہت جلد ہمت ہار جاتے ہیں۔ پولس اورسیلاس رات کو جیل میں بھی پرستش کررہے اورخُدا کی حمد کے گیت گارہے تھے (دیکھیں اعمال ۱۶ : ۲۵)۔ بہت سے لوگ ہمت ہار کر جلد ہی سو چکے تھے۔ ہمارا اصول یہ ہونا چاہیے : ’’کبھی ہمت نہ ہارو۔‘‘

میں آپ کی حوصلہ افزائی کرنا چاہتی ہوں کہ کبھی بھی خُدا سے باتیں کرنا ترک نہ کریں اور نہ ہی اُس کی آواز سُننے کے انتظار کو، چاہے کچھ بھی ہوجائے۔ ہر روز خُدا کے ساتھ وقت گزاریں۔ وہ شخص جو ہمت ہارنے سے انکار کرتا ہے ابلیس کے سامنے شکست نہیں کھا سکتا۔ وہ چاہتا ہے کہ آپ اِسی وقت ہمت ہار دیں اور اس طرح کی باتیں کریں:

’’مجھے کبھی بھی اچھّی نوکری نہیں مل سکتی۔‘‘

’’میری کبھی شادی نہیں ہوگی۔‘‘

’’میں کبھی قرض سے باہر نہیں آسکتا/سکتی۔‘‘

’’میں کبھی اپنا وزن کم نہیں کرسکتا/سکتی۔‘‘

اِس قسم کے رویے اس بات کی ضمانت ہیں کہ ہمیں کچھ نہیں ملے گا! لیکن ہم ایسے رویے کا انتخاب کریں جو کہتا ہے کہ ’’خُدا اپنے کلام کو پورا کرنے کے لئے بیداررہتا ہے اور میں کبھی ہمت نہیں ہاروں گا/گی۔‘‘ دعاوٗں کا نتیجہ نہ نکلنے کی سب سے بڑی وجہ ہمت ہار دینا ہے۔ ہم وقت پر کاٹیں گے لیکن کون سے وقت؟ یہ وہ وقت ہے جس سے خُدا واقف ہے کہ اب ہم تیار ہیں تاکہ اپنے مانگنے کے مطابق حاصل کریں۔ اُس وقت تک ہمارا کام ہے کہ وفادار رہیں۔ دُعا کرنا اورفرمانبرداری کرنا جاری رکھیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

آج آپ کے لئے خُدا کا کلام:  خُدا ہمیں باربارموقع فراہم کرتا ہے، پس اگر آپ پھر سے شروع کرنا چاہتے ہیں تو آج کا دِن وہ دِن ہے!

Facebook icon Twitter icon Instagram icon Pinterest icon Google+ icon YouTube icon LinkedIn icon Contact icon